فروری

کچھ اردو گرائمر کے بارے میں

User Rating: 0 / 5

Star InactiveStar InactiveStar InactiveStar InactiveStar Inactive
کچھ اردو گرائمر کے بارے میں
ابن انشاء
فعل ديگر
فعل کی بنيادی قسمیں دو ہيں، جائز فعل، ناجائز فعل، ہم صرف جائز فعل کے افعال سے بحث کريں گے، کيونکہ قسم دوم پر پنڈت کو آنجہانی اور جناب جوش مليح آبادی مبسوط کتابيں لکھ چکے ہيں۔فعل کی دوقسمیں فعل لازم اور فعل متعدی بھی ہيں، فعل لازم وہ ہے جو کرنا لازم ہو، مثلا افسر کی خوشامد، حکومت سے ڈرنا، بيوی سے جھوٹ بولنا وغيرہ۔
فعل متعدی:
عموما متعدی امراض کی طرح پھيل جاتا ہے ايک شخص کنبہ پروری کرتا ہے، دوسرے بھی کرتے ہيں، ايک رشوت ليتا ہے،
Read more ...

بچہ ہوں میں لیکن

User Rating: 0 / 5

Star InactiveStar InactiveStar InactiveStar InactiveStar Inactive
بچہ ہوں میں لیکن
اسامہ یونس
عمیر بیٹا ہوش کے ناخن لو یہ کس کو بغیر اطلاع کیے گھر میں لارہے ہو، گھر میں تمہاری بہنیں موجود ہیں، تمہاری ماں موجود ہے اتنی احمقانہ حرکت کہ ایک اجنبی نوجوان کو منہ اٹھائے اندر لے آئے ہو، دروازے کے ساتھ ہی گھنٹی کا بٹن ہے اسے دبانے کی بھی تمہیں توفیق نہ ہوئی، عمیر کے ابو نے سمجھاتے ہوئے کہا۔
ابو اس سے کیا فرق پڑتا ہے، عمیر نے بڑی معصومیت سے جواب دیا۔
اوہ احمق، اگر کسی غیر آدمی کو گھر میں لانا ہو تو خواتین سے کہتے ہیں
Read more ...

خبردار!شیطان تمہارا کھلم کھلا دشمن

User Rating: 0 / 5

Star InactiveStar InactiveStar InactiveStar InactiveStar Inactive

">خبردار!شیطان تمہارا کھلم کھلا دشمن ہے !!

ام بریرہ جمشید
کیا ہم یہ انصاف کررہے ہیں ؟شیطان ہماراازلی دشمن ہے ،جو کسی بھی صورت میں ہمیں خوشیوں میں دیکھنا نہیں چاہتا ،اس کی چاہت یہ ہے کہ وہ انسانوں کو عداوتوں اوردشمنیوں کی زَد میں لاکر ذلیل بنا کررسوائے زمانہ بنائے اور آخرت میں جہنم کا مستحق ٹھہرائے، بالخصوص میاں بیوی کے درمیان اختلاف پیدا ہونے سے وہ اتنا خوش ہوتا ہے کہ اپنے ہم نشینوں کو گلے لگاتا ہے اوروہ ان کو دیکھ کر تالیاں بجاتا ہوا اپنی خوشیوں کا اظہارکرتا ہے ،اس لئے میاں بیوی کی ناچاقیوں سے میاں بیوی نہیں بلکہ اس سے گھر اور خاندان کے سارے افراد متأثر ہوتے ہیں اوربنیاد یہیں سے ڈالی جاتی ہے،اللہ تعالیٰ نے حکم دیا کہ تمہارا حقیقی دشمن یہی ہے ،اس کو دشمن جانو ،ہم نے اس کے بجائے اپنوں کو دشمن قرار دیا تو کیا ہم یہ انصاف کررہے ہیں ؟
Read more ...

سانحۂِ پشاور اور ہم سب کی ذمہ داریاں

User Rating: 0 / 5

Star InactiveStar InactiveStar InactiveStar InactiveStar Inactive
سانحۂِ پشاور اور ہم سب کی ذمہ داریاں
متکلم اسلام مولانا محمد الیاس گھمن
یہ کیا ہو رہا ہے؟صبح وشام عالم اسلام پر مظالم ، اس کا بے دریغ قتل،اس کی آبروریزی اور پستی و درماندگی کی خبریں پڑھ پڑھ کر دل خون کے آنسو روتا ہے۔ ہرروز میری قوم کسی نہ کسی المناک سانحے سے دوچار ہو رہی ہے۔ بالخصوص ایک خاص مکتب فکر کے حامل افراد کو زیادہ نشانہ بنایا جارہا ہے۔ ان حوادثات کے بارے میں پہلی بات تو یہ ہے کہ ہمیں اس موقع پر قرآن کریم اور اسوۂرسول صلی اللہ علیہ وسلم میں مذکور”صبر“ والے حکم پر عمل کرنا ہوگا۔
دوسری بات یہ ہے کہ والدین کو اپنے بچوں کی تربیت پر زیادہ توجہ دینا ہوگی ، ہمارے بچے اور بچیاں کہیں غلط سوسائٹی میں تو نہیں پل بڑھ رہے؟ان کے کچے ذہنوں میں معاشرتی برائیاں تو جنم نہیں لی رہیں ؟ کیا ہماری اولاد کو اسلامی کلچر،اسلام کی بنیادی تعلیم اور اسلام کے طرز زندگی سے واقفیت ہے یا نہیں؟
Read more ...
Page 2 of 2